کیا ایٹمی جہنَّم کی عالمگیر جنگ کے وقوع کو روکا جا سکتا ہے۔۔۔۔۔ پروفیسر جے پی چوہدری

جی ہاں ! ہماری اچھّی طرح سے سوچی سمجھی رائے ہے کہ اگر اقوامِ مُتحدَّہ اور دُنیا درج ذیل چار نُکاتی سایَنسی فارمُولے پر اِیمان داری سے عمل د رآمد کر لے تو ایٹمی جہنَّم کی عالمگیر جنگ کو یقینا روکا جا سکتا ہے: ۔

امن عالم کا چار نکاتی فارمولا

۱ ۔ فی الفور اےک اور صرف اےک عالمی رےاست ;47;عالمی نظام کا قےام عمل مےں لاےا جائے ۔

۲ ۔ بےن الاقوامی جنگوں کے بنےادی عامل( قومی اورعلاقائی رےاستوں )کی فی الفور تحلےل کر دی جائے ۔

۳ ۔ کرہ ارض کے تما م ذراءع پےداوار اور ذراءع ربوبےت عالمی رےاست کی ملکےت اور custodyمےں دے دئیے جائےں ۔

۴ ۔ عالمی رےاست تمام ذراءع پےداوار اور ذراءع ربوبےت کو رنگ ،نسل،ذات پات ، جنس، زبان، مذہب و عقےدہ اور کسی بھی علاقائی امتےاز کے بغےر مساوےانہ طور پر تما م انسانوں کی انفرادی اور اجتماعی فلاح و بہبود پر صرف کرنے کی ذمہ دارہو ۔

یہ پےش کردہ چار نکاتی فارمولا تصوراتی ےا ذہنِ آزاد کی کو ئی نا قابل عمل موشگافی نہےں ہے بلکہ ےہ امن عالم کا سائنسی، منطقی اور ناقابل تردےد حل ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں