2 روز قبل اغوا کیے گئے کم سن بچوں کو ‘بدلہ’ لینے کیلئے قتل کیا گیا،ملزمان کا اعتراف

شیخوپورہ: صوبہ پنجاب کے شہر شیخوپورہ کے علاقے فیروز وٹواں سے 2 روز قبل کم سن بہن بھائی کے اغوا کا ڈراپ سین ہوگیا اور دونوں بچوں کو قتل کرکے لاشیں نالے میں پھینکنے والے 4 ملزمان کو گرفتار کرلیا گیا۔

پولیس کے مطابق شیخوپورہ کے علاقے فیروز وٹواں میں دو روز قبل جڑانوالہ سے اپنے ننھیال آنے والے 2 سالہ خدیجہ اور 3 سالہ توحید کو ملزمان نے اغوا کرلیا تھا اور انھیں بےدردی سےقتل کرنے کے بعد لاشیں نالے میں پھینک دی تھیں۔

پولیس نے بچوں کے والد شکیل کی مدعیت میں تھانا بھکی میں اغوا کا مقدمہ درج کیا تھا۔

جس کے بعد ڈی پی او شیخوپورہ جہا نزیب خان نے فوری ایکشن لیتے ہوٸے بچوں کی تلاش کے لیے ایک ٹیم تشکیل دی، جس نے اپنے تمام تر وساٸل بروے کار لاتے ہوئے 4 ملزمان کو گرفتار کر لیا۔

پولیس کے مطابق بچوں کے والد شکیل کی پہلی منگنی بھی اسی گاؤں کی نبیلہ بی بی نامی خاتون کے ساتھ ہوئی تھی، جو بعد میں ٹوٹ گئی تھی، جس پر ملزمہ نے بدلہ لینے کے لیے اپنے بھائی علی، کزن حفیظ اور بچوں کے ماموں شاہد سے مل کر بچوں کو اغوا کیا اور گلا دبا کر قتل کردیا۔

ملزمان نے بچوں کی لاشیں کلہ وٹواں نہر میں پھینک دی تھیں، جن کی تلاش جاری ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں